Press Coverage

عجائب گھروں کو بہتر بنا کر حکومت اپنے ریونیو میں اضافی کر سکتی ہے،زلفی بخاری

اسلام آباد(نیوزرپورٹر )  وزیراعظم کے مشیر برائے سمندر پار پاکستانیز اور انسانی وسائل   زلفی بخاری نے کہا  ہے کہ  عجائب گھروں کو بہتر بنا کر حکومت اپنے ریونیو میں اضافی کر سکتی ہے،کاروباری اور ثقافتی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے بہترین نیٹ ورک ضروری ہے۔ ایس ڈی پی آئی کے سیمینار سے آن لائن  خطاب کرتے ہوئے  انہوں نے کہا کہ عجائب گھروں میں کسی بھی قسم کی غیر قانونی سرگرمیوں پر کارروائی ہو گی۔ ٹیکسلا اور لاہور سمیت ملک کے مختلف سیاحتی مقامات کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے ۔زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ چترال میں سیاحتی سرگرمیوں کے فروغ کے لئے کام کر رہے ہیں ۔پاکستان میں سب سے زیادہ سیاحت کے شوقین وزیراعظم عمران خان ہیں پاکستان ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن پر مجھے کافی تنقید کا نشانہ بنایا گیاسیمپوزیم ملک کو پیسہ بنا کر دیتے ہیں جبکہ پاکستان میں ایسی سوچ نہیںہم لاہور میوزیم کو آرکیالوجی کے تحت کریں گے، بورڈ  تشکیل دیں گے۔انہوں نے کہا ٹیکسلا میوزیم خوب صورت میوزیم ہے جہاں بدھا کی باقیات موجود ہیں۔سعودیہ عرب اور قطر ہمارے میوزیم پر سرمایہ کاری کرنے کے لیے تیار ہیں۔ایبٹ آباد، کالاش، پشاور میں بھی عالمی معیار کے میوزیم بنائے جائیں گے۔ کورونا وائرس کے دوران کامرس انڈسٹری کے لیے حکومت پاکستان نے بہترین اقدامات کی ہم موسم سرما کے دوران سیاحت کو فروغ دینے کے لیے منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔چترال ایک قدرتی سیاحت کا مقام ہے اسے نکھارنے کے لیے کام کر رہے۔

Source: https://www.nawaiwaqt.com.pk/E-Paper/islamabad/2020-12-17/page-8/detail-21